ہمارے پاس ٹیسٹنگ کٹس کی کمی ہے،لیاقت شاہوانی

ایک سفید پوش طبقہ ہے جو بھوکہ سو جائے گا لیکن کسی سے مانگے گا نہیں

0

بلوچستان24ویب ڈیسک

بلوچستان حکومت لاک ڈاون کے دوران متاثرین کی داد رسی کا طریقہ کار طے کرہی ہے دو مرحلوں میں امداد دی جائے گی جس کیلئے ہلیپ لائن اور صوبائی سطع پر بنے والی فورس کام کرے گی حکومت بلوچستان کے ترجمان لیاقت شاھوانی کی میڈیا کو بریفنگ

سول سیکرٹریٹ میں کورونا وائرس کے بعد پیدا شدہ صورتحال سے متعلق میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے حکومت بلوچستان کے ترجمان لیاقت شاھوانی نے بتایا کہ صوبے میں لاک ڈاون کا سلسلہ جاری ہےدیہاڑی دار مزدور طبقے اور دیگر لوگوں کا روزگار بری طرح سے متاثر ہوا ہے،حکومت بلوچستان نے متاثر ہونے والے لوگوں کی نشاندہی کی ہے

مستحقین کو امداد پہنچانے کے مختلف طریقوں پر غور کر رہے ہیں ہماری ترجیح ہے کہ کسی قسم کا رش نہ بنے ہم ڈیلی ویجرز کو 2 کیٹیگریز میں تقسیم کیا ہے ایک سفید پوش طبقہ ہے جو بھوکہ سو جائے گا لیکن کسی سے مانگے گا نہیں حکومت نے فیصلہ کیا ہے کہ متاثر ہونے والے سفید پوش طبقے کی خدمات حاصل کریں گے

  اور اجرت دیں گے پہلے مرحلے میں دیہاڑی دار مزدور طبقے کو راشن ان کے گھروں تک پہنچائیں گے وزیر اعلی سیکٹریٹ میں ہیلپ لائن بنائی جارہی یے جو ریلف کی سرگرمیوں کی نگرانی اور کورونا وائرس سے متعلق فوری اقدام کرے گی اگر کسی کو کروناوائرس کی علامات ہیں وہ رابطہ کرے اسکے ٹسسٹ اور علاج کیلئے فوری رسپانس دیا جائے گا

ان کا کہنا تھا کی اب تک 5 ہزار  این 95 ماسک سمیت دیگر سامان موصول ہو چکا ہے حفاظتی سامان ہسپتالوں کو دیا جارہا یے بلوچستان حکومت نے ڈونرز سے رابطے کے لیے سینیئر افسران پر مشتمل کمیٹی قائم کی ہےکمیٹی ملکی و غیر ملکی ڈونرز سے رابطہ کرے گی

بلوچستان کے پاس ٹیسٹنگ کٹس کی کمی ہے،وفاقی حکومت کو کٹس کی کمی سے متعلق آگاہ کر دیا گیا ہے کروناوائرس سے بچنے کا واحد طریقہ سوشل ڈسٹینس ہےعوام سے اپیل ہے تعاون کریں ورنہ مزید سخت اقدامات کرنا پڑیں گے،

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.

%d bloggers like this: