گوادر میں حق دو تحریک کے زیر اہتمام ماہیگیروں کا عظیم الشان جرگہ

1

گوادر  گوادر میں حق دو تحریک کے زیر اہتمام ماہیگیروں کا عظیم الشان جرگہ، ماہیگیروں کے صلہ و مشورے سے مرتب کردہ 7 نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈز عملدرآمد کے لئے اجتماعی شکل میں ضلعی انتظامیہ کو پیش۔تفصیلات کے مطابق حق دو تحریک بلوچستان کے قائد مولانا ہدایت الرحمان بلوچ، بزرگ سیاسی رہنما واجہ حسین واڈیلہ کی سربراہی میں گوادر کے ماہیگیروں کا ایک بہت بڑا جرگہ پدی زر چاپڑہ میں منعقد ہوا جس میں ماہیگیروں کے جائز مطالبات کو عملی جامہ پہنانے کے لئے صلہ و مشورہ کیا گیا.

ماہیگیروں کے باہمی مشورے سے 7 بنیادی مطالبات کو تحریری شکل میں مرتب کیا گیا اور اس کے 7 نکاتی چارٹر آف ڈیمانڈ پر عملدرآمد کے لئے ضلعی انتظامیہ کے حوالے کرنے پر اتفاق ہوا.ماہیگیروں کے جرگے سے خطاب کرتے ہوئے حق دو تحریک کے سربراہ مولانا ہدایت الرحمان بلوچ نے واضح طور پر کہا کہ ہم لسانی و قومی تعصب کے ہرگز حامی نہیں بلکہ گوادر میں سب کے کاروبار کرنے کے حق کو تسلیم کرتے ہیں مگر حاکمیت کی شرط پر بالکل نہیں ان کا کہنا تھا کہ گوادر کے مالک یہاں کے لوگ ہیں اور ان کو محکوم و مظلوم اور اقلیت میں تبدیل ہونے نہیں دیں گے.

یہ بھی پڑھیں
1 of 5,206

قائد حق دو تحریک نے مزید کہا کہ ماہیگیروں کے جو بھی جائز مطالبہ ہیں حق دو تحریک ان کے حصول کے لئے جدوجہد کرے گی.جرگے سے خطاب کرتے ہوئے واجہ حسین واڈیلہ نےماہیگیروں کو واضح طور پر کہا کہ یکجہتی و اتفاق سے ہر مسئلے کا حل ممکن ہے اور جب تک ہم اکھٹے رہیں گے کوئی ہمیں نقصان نہیں پہنچا سکتا مگر کچھ لوگوں کو یہ یکجہتی راس نہیں آرہی اس لئے مختلف حیلوں اور پروپیگنڈوں سے عوام کی یکجہتی کو نقصان پہنچانا چاہتے ہیں تاکہ ماہیگیروں کو فائدہ ملنے کے بجائے ان مفاد پرستوں کو ہمیشہ کی طرح فائدہ ملے

انھوں نے کہا کہ گوادر کے ماہیگیروں کے لیے مختص 200 ایکڑ اراضی کو شفاف انداز میں مائی گیروں کے درمیان الاٹمنٹ کی جائے اور وفاقی و صوبائی حکومتوں کی جانب سے اعلان کردہ مائیگیری انجن شفاف طریقے سے تقسیم کئے جائیں سیاسی بنیادوں پر اور غیر شفاف طریقے سے تقسیم کسی صورت قبول نہیں کی جائے گی، جرگے کے اختتام پر تمام ماہیگیروں نے کے لئے ایک ہفتے کی مہلت دی گئ. ہم ان غیر مقامی ناخداوں جن کو ہمارے ہی لوگوں نے فشریز کارڈ دلائے ہیں ان سے کہتے ہیں کہ وہ ہمارے ساحل سے ماہی گیری ترک کر دیں ہمارے ماہی گیروں کے ساتھ مل کر خلاصی جانشو کے طور پر مزدوری کریں۔
جو غیر مقامی ماہی گیر ہیں وہ اہنا سرمایہ یہاں خرچ نہیں کرتے ہیں۔ کہ یہاں کے دکانداروں یہاں کے عام لوگوں کو اس کے فوائد ملیں۔
ان کے تمام کارڈ اور لائسنس جن مقامی لوگوں کے نام پر انہوں نے حاصل کی ہیں فوری طور پر کینسل کی جائیں۔ ہم اج کئی مشکلات سے دو ار ہیں پٹرول کے مقروض ہیں۔ مہنگائی آسمان کو چھو رہی ہے۔
انہوں نے کہا کہ ہم پر امن لوگ ہیں۔ ہم اپنا چارٹر آف ڈیمانڈ اے ڈی سی کو پیش کررہے ہیں۔
اے ڈی سی نے ماہی گیروں سے کہا کہ ہم چاہتے ہیں کہ مہنگاہی میں کمی آجائے ہم روز ریٹ معلوم کر رہے ہیں اگر کسی نے نرخ نامے کی خلاف ورزی کی ہم ان کو سزا دیں گے۔ انہوں نے ماہی گیروں سے یاداشت وصول کی۔
ماہی گیر مولانا کی قیادت میں فشریز افیس بھی گئے اور وہاں کے اسسٹنٹ ڈائریکٹر فشریز کو ماہی گیر الہی بخش و دیگر ماہی گیروں نے یاداشت پیش کی۔

You might also like
1 Comment
  1. […] گوادر پرو کے مطابق عمار نے مزید کہاان پسماندہ علاقوں کو چائنا پاکستان اکنامک کوریڈور (سی پیک) کے ذریعے بھی فوائد حاصل ہوئے ہیں جو خنجراب سے شروع ہو کر گوادر تک جاتا ہے،میں نے خود بھی کچھ جگہوں کا سفر کیا ہے۔ چین کی ڈیجیٹل معیشت کا پیمانہ گزشتہ چند سالوں کے دوران تیزی سے پھیل رہا ہے اور ان کا خیال ہے کہ اس شعبے میں چین کے ساتھ تعاون پورے ملک میں ڈیجیٹل معیشت کو فروغ دینے میں اہم کردار ادا کر سکتا ہے۔ […]

Leave A Reply

Your email address will not be published.