پاکستان اور روس کے درمیان دس بلین ڈالر کے گیس پائپ لائن کا معاہدہ ہوگیا

0

ویب ڈیسک

پانچ سو ملین سے ایک بلین کیوبک فٹ گیس کی فراہمی کیلئے پاکستان اور روسی کمپنی کے درمیان معاہد ہ ہوگیامعاہدے کے تحت روسی کمپنی گز پروم پاکستان میں آ ف شور گیس پائپ لائن پر اپنے خرچے پر کام کریگی

معاہدے کے تحت پروجیکٹ میں انڈر گراؤنڈ گیس اسٹوریج ،ڈی سیلینیشن اور دیگر پاور پروجیکٹ شامل ہیں جن پرروسی کمپنی کام کریگی پاکستان روس سے روزانہ پانچ سوملین سے ایک بلین کیوبک فٹ گیس سی لنکے کے ذریعے حاصل کریگا

معاہدہ پاکستان کے انٹر اسٹیٹ گیس سسٹم اور گز پروم کمپنی کے درمیان کیا گیا گز پروم کمپنی کے سربراہ ویٹیلی اے مرلوف اور انٹر اسٹیٹ گیس سسٹم پاکستان کے منیجنگ ڈائریکٹر مبین صولت نے انٹر کارپوریٹ معاہدے پر دستخط کیے

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,770

وزیر پیٹرولیم غلام سرور سے روسی وفد نے ملاقات کی جس میں پاک روس کے مابین تیل و گیس کی تلاش اور پیداوار سے متعلق امو ر پر تبادلہ خیال کیا گیاویٹیلی اے مرلوکو ف نے وفاقی وزیر کو روس کے دورے کی بھی دعوت دی جو انہوں نے قبول کرلی

روس کے قطر بحرین اور دوسرے وسطیٰ ایشیائی ریاستوں میں گیس کے بڑے ذخیرے ہیں روس نے پاکستان اور بھارت کو بھی براستہ گوادر آف شور گیس پائپ لائن کے ذریعے ایکسپورٹ کرنے کی آفر کی تھی

سی پیک کے تحت پاکستان کے انرجی ضروریات میں اضافہ ہورہا ہے اور یہ معاہدہ اس حوالے سے بعض ضروریات کو پورا کرنے میں مدد گار ثابت ہوگا اور اس سے پاکستان آف شور گیس پائپ لائن ٹرانزٹ کرنیوالے ممالک کی فہرست میں شامل ہوجائیگا

پاکستان میں گیس کی قلت کا مسئلہ شدت اختیار کرتا جارہا ہے اور سردیوں میں طلب میں اضافہ ہوجاتا ہے سابق نواز دور حکومت میں بھی قطر ایل این جی لانے کا معاہدہ کیا گیا جبکہ دوسری جانب پاکستان سی پیک کے تحت عالمی مارکیٹ بنتی جارہی ہے

روسی معاہدے کے علاقے تائی پی گیس پائپ لائن منصوبے پر کام جاری ہے جو دس بلین ڈالر کامنصوبہ ہے جس کے تحت ساؤتھ اور وسطیٰ ایشیا کی ریاستیں منسلک ہوجائینگی

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.