صوبائی حکومت کی عوام پر توجہ نہیں، ایم کیو ایم کا رینجرز کو سندھ بھر میں اختیارات دینے کا مطالبہ

0

کراچی: متحدہ قومی موومنٹ ( ایم کیو ایم) پاکستان نے پورے سندھ میں رینجرز کو یکساں اختیارات دینے کا مطالبہ کردیا۔

ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماؤں نے کراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ صرف کراچی میں رینجرز کو اختیارات دینے سے جرائم نہیں رکیں گے بلکہ رینجرز کو  پورے صوبے میں یکساں اختیارات دیے جائیں اور پولیس سے کالی بھیڑوں کو ختم کیا جائے کیونکہ اس کے بغیر جرائم ختم نہیں ہو سکتے۔

سینیٹر فیصل سبزواری کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت انتخابات میں کامیابی کے خمار سے ہی نہیں نکل پا رہی، کراچی میں اسٹریٹ کرائم کی واردتوں میں عام شہری قتل کیے جارہے ہیں اور  کئی بار مجرم پولیس کی ہی صفوں سے ملتے ہیں۔

 انہوں نے کہا کہ پولیس عیدی کی کلیکشن کے لیے نہیں ہے بلکہ پولیس کا کام جرائم پیشہ عناصر کو لگام ڈالنا ہے اور اگر امن و امان کے قیام کے لیے نیبر ہڈ سسٹم  سندھ حکومت نہیں بنائے گی تو ایم کیو ایم بنائے گی۔

وزیر داخلہ سندھ سے متعلق فیصل سبزواری کا کہنا تھاکہ  ضیا لنجار وزیرداخلہ ضرور بنیں لیکن انہیں اپنا رویہ درست کرنا ہوگا، آپ پورے صوبے کے وزیر داخلہ ہیں کسی کے کوآرڈی نیٹر نہیں ہیں۔

ایم کیو ایم رہنما خواجہ اظہار الحسن کا کہنا تھا کہ نیا آئی جی سندھ لگا تو کچے کے ڈاکوؤں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی اور ایسا لگتا ہے کہ ڈاکوؤں کو لائسنس ٹو کل مل گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ سندھ حکومت نے وفاقی حکومت کو بلیک میل کر کے اپنی مرضی کا آئی جی لگوایا ہے۔

 پریس کانفرنس میں ایم کیو ایم پاکستان کے رہنماؤں نے مطالبہ کیا کہ کراچی میں امن و امان کے خراب حالات پر چیف جسٹس سندھ ہائیکورٹ نوٹس لیں اور وفاقی اور صوبائی حکومت بھی امن و امان کے قیام کے لیے سنجیدہ اقدامات کریں۔

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,746
You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.