بلوچستان : خشک سالی نے مال مویشیوں کو بھی نگلنا شروع کردیا

0

خصوصی رپورٹ ۔۔بلوچستان24

چاغی کے علاقے سے تعلق رکھنے والا داد محمد اپنے مال مویشیوں کے مرنے سے پریشان ہے اور اسے خطرہ لاحق ہے کہ اگر کی مدد نہیں کی گئی تو نان شبینہ کامحتاج ہوجائیگا

داد محمد کہتا ہے
خشک سالی نے مال مویشیوں کوختم کردیا جس کے پاس سو جانور تھے اب دس رہ گئے ہیں اور بارشیں نہ ہونے کے باعث ہمارے علاقے میں نالے اورپانی کے ذخائر نہ ہونے برابر ہیں لوگ نقل مکانی پر مجبور ہیں ہمیں فوری مدد درکا ر ہے تاکہ جو جانوربچ گئے ہیں وہ محفوظ رہ سکیں

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,730

محکمہ لائیو اسٹاک کے اعداد وشمار کے مطابق بلوچستان کے خشک سالی سے متاثرہ اٹھارہ اضلاع میں 16سے 17لاکھ مال مویشی بری طرح متاثر ہو ئے ہیں متاثرہ اضلاع میں ژوب ،قلعہ سیف اللہ ،صحبت پور ،کوئٹہ ،موسیٰ خیل ،قلعہ عبداللہ ،پنجپائی سمیت دیگرشامل ہیں

محکمہ لائیو اسٹاک کے مطابق خشک سالی سے متاثرہ جانوروں کی ویکسی نیشن نہ ہونے سے اموات بڑھ سکتی ہیں مالداروں کی جانوروں کوخشک گھا س دینے سے جانور بری طرح کمزور پڑ رہے ہیں اس خطرناک صورتحال سے نمٹنے کیلئے محکمہ لائیو اسٹاک کوفنڈزکی کمی کاسامنا ہے
ڈائریکٹر جنرل لائیو اسٹاک بلوچستان غلام حسین کہتے ہیں موجودہ صورتحال کے حوالے سے محکمہ فنانس سمیت حکومت کو آگاہ کردیا ہے سمری بھی بجھوادی ہے فیڈ کی خریداری میں دشواری کاسامنا ہے

غلام حسین کے بقو ل محکمہ لائیو اسٹاک کوخشک سالی سے نمٹنے کیلئے مال مویشیوں کی ویکسی نیشن کیلئے 26ملین درکار ہیں

ڈی جی لائیو اسٹا ک کہتے ہیں
”محکمہ اپنے موجودہ وسائل کے مطابق حاملہ جانوروں کی نگہداشت کیلئے اقدامات کررہا ہے خاران میں چھ کیمپ لگائے گئے ہیں ژوب ،قلعہ سیف اللہ ،صحبت پور میں بھی کام جاری ہے موسیٰ خیل میں بھی شکایات ملنے پر کام شروع کردیا گیا ہے “

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.