موبائل فونز کی بندش ،کوئٹہ کے شہریوں کا حکومت سے فیصلے پر نظر ثانی کا مطالبہ

0
رپورٹ ۔۔۔ندیم خان اورسہیل بلوچ

حکومت نے غیر رجسٹرڈ موبائل فونز

کو بند کرنے کافیصلہ کیا ہے جس میں رجسٹریشن کیلئے پندرہ جنوری دی ہے اس فیصلے کو شہری کس نظر سے دیکھتے ہیں اور وہ حکومت سے کیا مطالبہ کرتے ہیں

بلوچستا ن24نے شہریوں کی رائے جاننے کیلئے جب شہریوں سے رابطہ کیا تو انہوں نے اس فیصلے کاخیر مقدم کیاجبکہ دکانداروں نے اس فیصلے پر تحفظات کا اظہار کیا جب کہ بعض نے اس سے موبائل کے کاروبار کو نقصان پہنچنے کاخدشہ ظاہر کیا

دکاندار عبدالقیوم نے کہا ’’ ہم ٹیکس بھی دیتے ہیں لیکن اس کے باوجود غیر رجسٹرڈ موبائلوں کو بند کیا جارہا ہے جو ہمارے کاروبار کے لئے نیک شگون نہیں ہے

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,746

حکومت ان موبائلوں کو رجسٹر کروانے کی پالیسی اپنائے تاکہ موبائل تاجراور موبائل صارف حکومت کی اس اقدام سے مستفید ہوسکیں

عبدالقیوم نے مطالبہ کیا کہ حکومت غیر رجسٹرڈ موبائل بندش کے فیصلے پر نظرثانی کرے

دکاندار نیک محمد نے غیر رجسٹرڈ موبائل بندش کی حکومتی فیصلے کو سراہا اور ان کا کہناتھا کہ یہ فیصلہ خوش آئند ہے حکومت جلد ازجلد اس فیصلے پر عمل درآمد یقینی بنائے کیونکہ اس حکومتی فیصلے سے موبائل کے کاروبار پر مثبت اثر پڑیگا۔

دکاندارصدام نے کہاحکومتی فیصلہ ایک مثبت امر ہے لیکن موبائل ڈیوٹی ٹیکس بہت زیادہ ہے حکومت ٹیکس میں کمی لائے تاکہ موبائل کاروبار کو فروغ مل سکے۔

غیر رجسٹرڈ موبائل بندش کے حوالے سے شہریوں کا کہنا تھا کہ حکومت اپنے فیصلے پر فوری عمل درآمد کرے کیونکہ اس اقدام سے عوام کی جان ومال کا تحفظ ممکن بنایا سکتا ہے ۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.