6سے زائد اراکین وزیرا علیٰ بننے کی دوڑ میں شامل

0
ویب رپورٹر
سابق وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ خان زہری کے خلاف مسلم لیگ (ن) سے تعلق رکھنے والے ارکان اسمبلی تحریک عدم اعتماد کامیاب ہونے کے بعد بلوچستان اسمبلی میں ایک بار پھر بحران نے جنم لینے کا سر اٹھالیا مسلم لیگ اراکین اسمبلی میں آدھی درجن سے زائد ممبران وزیراعلیٰ شپ کے دوڑ میں شامل ‘اسمبلی برطرف ہونے کا قوی امکان‘
یہ بھی پڑھیں
1 of 8,770
انتہائی اہم ذرائع سے اے این این نیوز کو معلوم ہوا کہ سابق وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثناء اللہ خان زہری کا استعفیٰ منظور ہونے کے بعد بلوچستان اسمبلی میں ایک بار پھر نئے بحران نے جنم لینے کا سر اٹھالیا ہے مسلم لیگ (ن) کے ناراض ارکان سے تعلق رکھنے والے ہرممبر کی خواہش ہے کہ وہ آنے والے نئے قائد ایوان منتخب ہو اور اس سلسلے میں اب تک آدھی درجن سے زائد اراکین اسمبلی میرسرفراز بگٹی‘ میر قدوس بزنجو‘ نواب چنگیزمری‘ جان محمد جمالی‘سردار صالح بھوتانی اور جعفرخان مندوخیل شامل ہیں
ذرائع نے بھی بتایا کہ اگر وقت سے قبل اراکین اسمبلی نے نئے قائد ایوان کے حوالے سے متفق نہیں ہوئے تو نئے بحران کی وجہ سے اسمبلی برطرف ہونے کا قوی امکان ہے ۔
You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.