الیکشن کمیشن نے الیکشن ایکٹ 2017 پر عمل درامد نہ کرنے والی 284 سیاسی جماعتوں کی رجسٹریشن کو منسوخ کر دیا ہے۔

0

ویب رپورٹر 

جن سیاسی جماعتوں کی رجسٹریشن منسوخ کی گئی ہے ان میں حزب مخالف کی جماعت متحدہ قومی موومنٹ، متحدہ مجلس عمل، نیشنل پارٹی، پاکستان پیپلز پارٹی پیٹریاٹ شامل ہیں۔

الیکشن کمیشن نے سیاسی جماعتوں سے دو لاکھ فیس، دو ہزار کارکنان کے شناختی کارڈ نمبر اور انگوٹھوں کے نشانات مانگے تھے۔ لیکن ان جماعتوں نے الیکشن کمیشن کی طرف سے مانگی گئی مطلوبہ چیزیں فراہم نہیں کیں۔

الیکشن کمیشن کی طرف سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن کے اس فیصلے کے خلاف سیاسی جماعتیں 30 روز میں سپریم کورٹ میں اپیل کر سکتی ہیں۔

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,717

یہ پہلی مرتبہ ہے کہ الیکشن کمیشن کی طرف سے اتنی بڑی تعداد میں سیاسی جماعتوں کی رجسٹریشن کو منسوخ کیا ہے۔

الیکشن کمیشن کی طرف سے جن مذہبی جماعتوں کی فہرست جاری کی گئی ہے ان میں پاکستان مسلم لیگ فنکشنل کے علاوہ سندھ نیشنل فرنٹ، پاکستان سنی تحریک، سنی تحریک اور تنظیم اہلسنت شامل ہیں۔

اس فہرست میں نیشنل پارٹی بھی شامل ہے جو بلوچستان میں وزیر اعلیٰ کے انتخاب کے لیے سرگرم ہے۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.