ملیریا کا مرض آگاہی ناگزیز

1

سٹی ڈیسک
کوئٹہ :خبرنامہ

ملیریا ایک خطرناک بیماری ہے جس سے سالانہ کروڑوں افراد متاثر ہوتے ہیں

صوبائی حکومت گلوبل فنڈ کے توسط سے ہرممکن اقدام کررہی ہے

ضلع پشین، قلعہ سیف اللہ، ژوب، شیرانی، موسیٰ خیل، ہرنائی، لورالائی، نصیرآباد، سبی اور نوشکی کے اضلاع میں 395 ہیلتھ فیسلٹی کو مکمل فعال کردیا گیا ہے

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,770

گلوبل فنڈ انڈس ہسپتال کے صوبائی سربراہ آصف انور شاہوانی کی بریفنگ

گلوبل پاٹنر شپ انڈس ہسپتال ملیریا کنٹرول پروگرام بلوچستان کے پروگریس ریویو اجلاس کی اختتامی تقریب سے ڈائریکٹر ٹیکنیکل ڈویلپمنٹ پی پی ایچ آئی بلوچستان، ڈاکٹر امیربخش بلوچ کا خطاب

اجلاس میںملیریا کنٹرول پروگرام کے صوبائی سربراہ ڈاکٹر کمالان گچکی، انڈس ہسپتال گلوبل فنڈ برائے تدارک ملیریا کے صوبائی سربراہ ڈاکٹر آصف انور شاہوانی،متعلقہ اضلاع کے ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسران، گلوبل فنڈ کے نمائندوں سمیت متعلقہ حکام نے شرکت کی

اجلاس کو بتایا گیا کہ گیارہ اضلاع میں اس وقت 80مائیکرو اسکوپی سینٹرز، 205پبلک آر ڈی ٹی سینٹرز، 110پرائیویٹ آرڈی ٹی سینٹرز مکمل فعال ہیں

مزید 93 ہیلتھ فیسلٹی سینٹرز میں اس کو فعال کردیا جائے گا۔ اکتوبر 2016ءسے ستمبر 2017ءتک 547817 مچھر دانیاں تقسیم کی گئی ہیں

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.