آزادی مارچ ،دھرنا ختم

ویب ڈیسک

جمعیت کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے اسلام آباد میں جاری دھرنا ختم کرنے کا اعلان کردیا

کچھ صوبوں میں ہمارے ساتھی سڑکوں پر نکل آئے ہیں آج ہی ہم یہاں سے روانہ ہونگے اور سڑکیں بلاک کرنے والوں کے ساتھ شامل ہوجائیں گے

گرتی ہوئی دیوار کو ایک اور دھکا دیں گے

پشاور موڑ پر شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے اپنے کارکنوں کو ہدایت کی کہ وہ اگلے محاذ پر شاہرائیں بلاک کرنے والے کی جانب بڑھیں اور ان کا حصہ بنیں۔

ا نہوں نے کہا کہ ہماری حوصلہ شکنی کی کوشش کی گئی لیکن انہیں ہم کہنا چاہتے ہیں نہ ہم تمہارے نام نہ سہارا لیکر آئے ہم نے اللہ پر اعتماد کیا ہے

حکومتی حلقوں کو خیال تھا کہ جب اجتماع یہاں اسے اٹھے گا تو انہیں آسانی ملے گی لیکن انہیں ہر جگہ مشکلات کا  سامنا رہیگا

جس طرح ہم نے پندرہ ملین مارچ کیے جو پرامن تھے

 مولانا فض الرحمان کا کہنا تھا کہ دنیا نے تسلیم کیا کہ ہم کتنے منظم ہیں ہم دوسرے محاذ پر جائینگے تو کارکن پرامن رہیں

پاکستان کی پولیس ،رینجرز اور فوج کا خون بھی مجھے اپنے کارکن کے خون کی طرح عزیز ہے

یہ ناجائزحکومت ہے ملک روز بروز تنزلی کی طرف جارہا ہے

یہ عوام ،ان کے حقوق اور ووٹ کے تقدس کی جنگ ہے جس میں عوام کو بھی  شامل کیا جائے

ہندوستان ،چین ،بنگلہ دیشن ،ایران ،افغانستان کی معیشت جنگ کے باوجود اوپر جارہی ہے لیکن پاکستان کی معیشت نیچےجارہی ہے

  ایسے حکمرانوں سے عوام کو نجات دلانا ہماری تحریک کا مقصد ہے

ہم وضاحت سے بات کرنا چاہتے ہیں جنہوں نے کشمیر کو بیچا ہے ہم بابری مسجد کے حوالے سے سپریم کورٹ کے فیصلے کو تعصبانہ سمجھتے ہیں

کشمیریوں کیساتھ ہیں

آپ نے جتنے دن یہاں گزارے آپ کو سلام پیش کرتا ہوں

مولانا فضل الرحمان نے حکومت کی طرف سے نواز شریف کو علاج کیلئے باہر جانے کی اجازت نہ دینے کی مذمت کی

https://pagead2.googlesyndication.com/pagead/js/adsbygoogle.js

اپنا تبصرہ بھیجیں