بولان وگردنواح میں گرج چمک کیساتھ بارش، نشیبی علاقے زیر آب آگئے

0

نمائندہ خصوصی بولان عمران سمالانی سے

مچھ بولان وگردنواح میں گرچ چمک کیساتھ بدستور وقفے وقفے سے موسلادھار بارشوں کے باعث نظام زندگی مفلوج ہوکر رہ گئی ہے۔

بولان قومی شاہراہ کی نشیبی حصے زیر آب آنے سے ٹریفک کی روانی معطل ہوتے رہی ہے۔

بارشوں کے باعث تحصیل مچھ کے کچی آبادی پر مشتمل علاقے کلی سمالانی کالونی کلی جمعہ خان گیشتری مچھ ندی کلی اختر آباد نیشنل آب گم بوڈیل کلی جلال آباد مری آباد کرتہ کھجوری جم بارڑی میں سیکڑوں کچے مکانات اور دیواریں منہدم ہوگئے ہیں۔

حالیہ بارشوں سے 2022کے سیلابی بارشوں سے متاثرہ افراد کھلے آسمان تلے آگئے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,746

دوسال کے طویل عرصے کے دوران حکومتی امداد و عدم بحالی کے باعث متاثرین کے تعداد میں مزید اضافہ ہوگیا ہے۔

بارشوں کے باعث کاروباری نظام بند ہونے کیوجہ سے شہری نان شبینہ کیلئے محتاج ہوکر رہ گئے ہیں۔

بولان انتظامیہ نے بارشوں کے پیش نظر بولان قومی شاہراہ پر غیرضروری سفر سے گریز کرنے اور احتیاطی تدابیر اختیار کرنے کی ہدایت اور بولان کی تفریحی مقامات اور دریا بولان پر پکنک منانے پر مکمل پابندی عائد کردی ہے۔

مچھ بولان کے عوامی حلقوں نے مطالبہ کیا ہے کہ حالیہ بارشوں نے مچھ و گرنواح میں تباہی مچادی ہے مچھ و گردنواح کے علاقوں کو آفت زدہ قرار دے کر متاثرین کی بحالی کیلئے اقدامات کیے جائیں۔

جبکہ 2022 میں سیلاب متاثرین کی امداد کے نام پر راشن و دیگر سامان میں ہونے والے خرد برد کا نوٹس لے کر تحقیقات کیا جائے اور ذمہ داروں کیخلاف کاروائی عمل لائی جائے تاکہ آئندہ امدادی سامان کو خردبرد کرنے کا کوئی سوچ بھی نہیں سکیں۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.