بلوچستان میں ٹڈی دل سے متاثرہونے والے علاقوں میں ایمر جنسی نافز

ہائی رسک اضلاع میں مسلسل نگرانی کےلئےٹیمیں دن رات کام کر رہی ہیں 

0

:بلوچستان 24 ویب ڈیسک

صوبائی وزیر داخلہ میر ضیاء اللہ لانگو اور وزیر زراعت زمرک اچکزئی کی پریس کانفرنس۔

ٹڈی دل سے فصلوں کو بہت نقصان پہنچا ہے۔
ہائی رسک اضلاع میں مسلسل نگرانی کےلئےٹیمیں دن رات کام کر رہی ہیں

صوبائی حکومت کی اولین کوشش ہے کہ زراعت کے لئے ضرورت کے تحت فنڈز مختص کیے جائیں صوبائی حکومت نے ان علاقوں میں ایمرجنسی نافذ کرکے فوری نوعیت کے کاموں کے لئے رقم بھی منظور کی ہے

۔ صوبائی حکومت نے ٹڈی دل کے حملے سے فصلوں کو محفوظ کرنے کےلئے لوکسٹ سرویلنس اینڈ کنٹرول اسٹریٹیجی تشکیل دی ہوئی ہے زمرک اچکزئی

مقامی کسانوں کی آگاہی کے لئے بڑے پیمانے پر مہم بھی چلائی جارہی ہے۔

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,750

ہمارے پاس محدود وسائل ہیں۔ زمرک اچکزئیزمیندار ٹڈی دل کے ڈر سے چاول کاشت نہیں کر رہے ہیں۔

ن علاقوں میں کسانوں کو سہولت اور آگاہی کے لئے محکمہ زراعت نے مقامی زبانوں میں موبائل ایپلیکیشن تیار کیے جاتے گے۔

صوبائی حکومت ٹڈی د ل کے حملوں کی موثر تدراک کےلئے متعلقہ وفاقی اداروں اور دیگر صوبوں کے ساتھ ایک مربوط حکمت عملی کے تحت کام کر رہی ہے۔

بلوچستان کے اضلاع میں ٹڈی دل سے جو نقصانات ہوئے ہیں ہفتہ دس دن میں موصول ہو جاے گے۔زراعت کسی بھی ملک میں معیشت کی ریڈ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے۔

وفاقی حکومت سے اپیل ہے بلوچستان کی زمیندار وں کے نقصان کا ازالہ کر لیں۔

جن علاقوں میں زمینداروں کے بہت نقصان ہوئے ہیں ان اضلاع کو آفت زدہ قرار دیا جائے

امید ہے جلد ٹڈی دل حملے پر قابو پا لیں گے۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.