اسرائیل نے دوبئی , تل ابیب پروازوں کے لیے سعودی عرب سے اجازت مانگ لی

ہمیں یقین ہے کہ سعودی عرب اسرائیل سے یواے ای کے درمیان براہ راست پروازوں کے لیے اپنی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت دیدے گا . بنیامنن نیتن یاہو کا اماراتی نشریاتی ادارے سے انٹرویو

0

:بلوچستان 24 ویب ڈیسک

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,717

تل ابیب: اسرائیلی وزیر اعظم بنیامنن نیتن یاہو نے اسرائیل اورمتحدہ عرب امارات (یو اے ای) کے درمیان فلائٹس کے لیے سعودی عرب سے فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت دینے کی درخواست کی ہے نیتن یاہو نے کہا ہے کہ اسرائیل متحدہ عرب امارات اور تل ابیب کے درمیان براہ راست ہوائی پرواز شروع کرنے کے لیے بھی کام کر رہا ہے جو سعودی عرب کی فضائی حدود سے گزرے گی .

انہوں نے کہا ہمیں یقین ہے کہ سعودی عرب تل ابیب سے دبئی کے درمیان براہ راست پروازوں کے لیے اپنی فضائی حدود استعمال کرنے کی اجازت دیدے گا مجھے پورا یقین ہے کہ ریاض کے ساتھ ہمارا معاہدہ طے پا جائے گا انہوں نے کہا یہ اسرائیلی ہوا بازی کی صنعت اور اسرائیلی معیشت کو بدل کر رکھ دے گا کیونکہ” فریقین“ کو سیاحت اور زبردست سرمایہ کاری کا موقع ملے گا.۔

اماراتی نیوز چینل سکائی نیوز عربیہ کو خصوصی انٹرویو میں انہوں نے ان وجوہات کا ذکر کیا ہے جس کی وجہ سے یہ معاہدہ ممکن ہو سکا اس کے علاوہ انہوں نے یہ بھی کہا کہ اس معاہدے سے اسرائیلی معیشت کو بھی فائدہ ہوگا.

گذشتہ دنوں اسرائیل اور متحدہ عرب امارات کے مابین ایک خصوصی معاہدہ ہوا ہے جس کے تحت اسرائیل نے مقبوضہ غرب اردن کے کچھ حصے کو اسرائیل میں ضم کرنے کے عمل کو فوری طور پر روک دیا ہے سکائی نیوز عربیہ کو دیے گئے اپنے انٹرویو میں اسرائیلی وزیر اعظم نتن یاہو نے خیال ظاہر کیا ہے کہ دوسرے عرب ممالک بھی اس معاہدے کی طرف بڑھیں گے.

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.