کوئٹہ : فون گھمائیں ۔۔۔۔شی بیکس کا کیک حاضر۔۔۔!

رپورٹ : مدثر محمود

کیمرہ مین: سہیل بلوچ

حورین بلوچ کوئٹہ میں پہلی بار مختلف قسم کی کیکس آن لائن فروخت کرتی ہیں،انہوں نے نہ صرف کیک بنانے کی باقاعدہ تربیت حاصل کرنے کے بعد آن لائن کاروبار شروع کیا ہے بلکہ اب وہ دوسری لڑکیوں کو بھی کیک بنانے کی تربیت دے رہی ہے۔

ہمارے نمائندے مدثر خان نے ان سے خصوصی  بات چیت کی ہے

مکمل ویڈیو دیکھنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

حورین بلوچ شی بیکس کے نام سے اپنا آن لائن کاروبار کرتی ہے وہ چار سال سے یہ کاروبار چلارہی ہے وہ مختلف قسم کی کیکس بناتی ہے اور اس کو آن لائن فروخت کیلئے پیش کرتی ہے اور وہ خریداروں کے فرمائش پر بھی کیک بناتی ہے حورین بلوچ نے بلوچستان 24ٖڈاٹ کام سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پہلے پہل مجھے کاروبار چلانے کیلئے ان پاس کوئی معلومات نہیں تھی،

ان کے بعد میں این آئی سی میں داخلہ لیا اور وہاں میں نے کار وبار کی تربیت لی اور وہاں سے پہلے نمبر کا ایوارڈ بھی جیتا اور اس کے میں اپنا کاروبار شی بیکس کے نام سے شروع کیا اور لوگوں کو پتہ چلا کہ شی بیکس کوئیٹہ میں ہے اور اب ماشاء اللہ میرا کاروبار صحیح چلا رہا ہے۔

حورین بلوچ کے بقول کیک بنانا ان کا جنون کے حد تک شوق تھا، وہ گھر والوں کو بھی کیک بنا کر دیتی تھی، اس کے بعد میں نے سوچا کیوں نہ اس کو ایک کاروبار کے طور پر شروع کیا جائیے حورین بلوچ کے مطابق وہ مختلف قسم کی کیک بناسکتی ہے، میں نے جتنے بھی کیک بنائے اس پر بہت اچھا ردعمل مجھے ملا، لوگ کیک کے ڈیزائن کو بہت پسند کرتے ہیں، جب میں اپنے کیک کسی نمائش میں رکھتی ہوں پہلے تو لوگ کچھ اور سمجھتے ہیں،کیونکہ کیکس کے ڈیزئن کچھ مختلف قسم کے ہوتے ہیں اور یہ کافی پرکشش ہوتے ہیں اور اچھا ردعمل آ رہا ہے۔

حورین بلوچ کے مطابق وہ اپنا کاروبار سماجی ویب سائٹس کے ذریعے چلحورین بلوچ شی بیکس کے نام سے اپنا آن لائن کاروبار کرتی ہے وہ چار سال سے یہ کاروبار چلارہی ہے وہ مختلف قسم کی کیکس بناتی ہے اور اس کو آن لائن فروخت کیلئے پیش کرتی ہے اور وہ خریداروں کے فرمائش پر بھی کیک بناتی ہے حورین بلوچ نے بلوچستان 24ٖڈاٹ کام سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ پہلے پہل مجھے کاروبار چلانے کیلئے ان پاس کوئی معلومات نہیں تھی،

ان کے بعد میں این آئی سی میں داخلہ لیا اور وہاں میں نے کار وبار کی تربیت لی اور وہاں سے پہلے نمبر کا ایوارڈ بھی جیتا اور اس کے میں اپنا کاروبار شی بیکس کے نام سے شروع کیا اور لوگوں کو پتہ چلا کہ شی بیکس کوئیٹہ میں ہے اور اب ماشاء اللہ میرا کاروبار صحیح چلا رہا ہے۔

حورین بلوچ کے بقول کیک بنانا ان کا جنون کے حد تک شوق تھا، وہ گھر والوں کو بھی کیک بنا کر دیتی تھی، اس کے بعد میں نے سوچا کیوں نہ اس کو ایک کاروبار کے طور پر شروع کیا جائیے حورین بلوچ کے مطابق وہ مختلف قسم کی کیک بناسکتی ہے، میں نے جتنے بھی کیک بنائے اس پر بہت اچھا ردعمل مجھے ملا، لوگ کیک کے ڈیزائن کو بہت پسند کرتے ہیں، جب میں اپنے کیک کسی نمائش میں رکھتی ہوں پہلے تو لوگ کچھ اور سمجھتے ہیں،کیونکہ کیکس کے ڈیزئن کچھ مختلف قسم کے ہوتے ہیں اور یہ کافی پرکشش ہوتے ہیں اور اچھا ردعمل آ رہا ہے۔

حورین بلوچ کے مطابق وہ اپنا کاروبار سماجی ویب سائٹس کے ذریعے چلا رہی ہے انہوں نے فیس بک اور انسٹاگرام پر اپنے پیجز بنائے ہیں اور اس پر اپنے بنائے ہوئے کیکس کے تصویریں لگاتی ہوں اور اس پر لوگ آڈر کرتے ہیں۔

ا رہی ہے انہوں نے فیس بک اور انسٹاگرام پر اپنے پیجز بنائے ہیں اور اس پر اپنے بنائے ہوئے کیکس کے تصویریں لگاتی ہوں اور اس پر لوگ آڈر کرتے ہیں۔

https://pagead2.googlesyndication.com/pagead/js/adsbygoogle.js

اپنا تبصرہ بھیجیں