جماعت پنجم اور ہشتم کے بورڈامتحانات ،تعلیم نظام کو بڑے نقصان کا خدشہ

ویب ڈیسک
کوئٹہ۔۔۔۔۔
اگر مطالبات تسلیم نہ ہوئے تو ہم اپنے احتجاج کو وسعت دینگے
ایسوسی ایشن کے پروفیسر محمد ابراہیم ابڑو ، محمد ابراہیم کھوسہ، امان اللہ مینگل، ولی محمد زہری، نثار احمد بھنگر، منظور احمد پندرانی، محمد نواز پندرانی کا کوئٹہ میں مظاہرے سے خطاب

مظاہرین نے بینرز اور پلے کارڈ ز اٹھا رکھے تھے جن پر نعرے درج تھے

حکومت اور محکمہ تعلیم کے ارباب اختیار کے غلط فیصلوں اور اقدامات کی وجہ سے پرائیویٹ سکولز کے اساتذہ اور طلباء وطالبات کو شدید مشکلات کا سا منا کر نا پڑ رہا ہے

جماعت پنجم اور ہشتم کے بورڈ کے امتحانات کے علاوہ گرم علاقوں کے تعلیمی شیڈول میں تبدیلی سے مسائل بڑھ رہے ہیں
دوسری جانب پرائیویٹ تعلیمی اداروں طلباء وطالبات پر تعلیم کے دروازے بند کر کے ان کے لئے مسائل پیدا کر رہی ہے

ان اقدامات سے فائدے کی بجائے نقصانات ہو رہے ہیں طلباء وطالبات بھی ان حکومتی اقدامات اور فیصلوں سے ناخوش ہیں

حکومت فوری طور پر جماعت پنجم اور ہشتم کے بورڈ کے امتحانات کا فیصلہ واپس لیں
گرم علاقوں کے سابقہ شیڈول کو بحال کر کے طلباء وطالبات سمیت اساتذہ میں پائی جانیوالی بے چینی ختم ہو

مظاہرین اپنے مطالبات کے حق میں شدید نعرہ بازی کر تے ہوئے پرامن طور پر منتشر ہو گئے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں