بلوچستان ،اسمگلنگ کے خاتمے کے لئے جامع منصوبہ بندی کا فیصلہ

0

کوئٹہ(اسٹاف رپورٹر) بلوچستان ملک کا سب سے بڑا صوبہ ہے جہاں زراعت کی ترقی کے لئے وفاق اور صوبائی حکومت ملکر کام کریں گے ایسی اقتصادی و تجارتی پالیسیاں تشکیل دے رہے ہیں جس سے زراعت و صنعتی شعبوں کی نمایاں ترقی ہو اور روزگار کے زیادہ سے زیادہ مواقع پیدا ہوسکیں

وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر خان کا چیمبرز آف کامرس بلوچستان کے عہدے داران سے ملاقات اور تجارتی مشکلات کے حل کی تجاویز سے متعلق اجلاس سے خطاب

ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری چیمبرز آف کامرس بلوچستان کے سرپرست اعلی غلام

کوئٹہ:وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال سے ملاقات کررہے ہیں ۔وفاقی وزیر زبیدہ جلال بھی موجود ہیں

فاروق صدر جمعہ خان سمیت دیگر عہدے دار بھی موجود تھے

وفاقی وزیر خزانہ نے کہا کہ ملائیشیا سمیت عالمی مانگ کے مطابق بلوچستان و ملک بھر میں زراعت حلال فوڈ اور منرل سمیت مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کی وسیع گنجائش موجود ہے

سی پیک کی عمومی صورتحال میں اگلا مرحلہ صنعتوں کے قیام کا ہے ہماری کوشش ہے کہ آئندہ مرحلے میں مختلف چیمبرز آف کامرس کی نمائندگی کو یقینی بنایا جائے

بلوچستان کے ایکسپورٹرز کی مشکلات کا جائزہ لیکر ان کو حل کریں گے تجارتی پالیسوں کی تشکیل

کوئٹہ:وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کو چیمبر آف کامرس کے دورے کے دوران صدر چیمبر آف کامرس جمعہ خان شیلڈ دے رہے ہیں

میں نجی شعبے کی مشاورت کو شامل رکھیں گے

ملک سے غربت کے خاتمے کے لئے بی آئی ایس پی سمیت دیگر موثر پروگرامز متعارف کرائیں گے۔

ملک میں نوجوانوں کی صلاحیتوں سے فائدہ اٹھانے کے لئے انہیں ترقی کے غیر معمولی مواقع فراہم کریں گے

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,759

اسد عمر نے مزید کہا کہعالمی تجارت میں دہرا معیار ختم ہونا چاہئے ہماری کوشش ہے کہ ایران سمیت خطے کے تمام ممالک سے بہتر تجارتی تعلقات استوار کریں

انہوں نے کہا کہ ہم نے تجارتی تعلقات کی بہتری کے لیے بھارت کی طرف خیر سگالی کا ہاتھ بڑھایا

تاہم اس کا مثبت جواب نہیں ملا۔ ملک میں سازگار تجارتی ماحول کے قیام کے لئے ایسا نظام وضع کرنا چاہتے ہیں جس سے کاروباری طبقات کو درپیش پیچیدگیوں کا خاتمہ ہو اور کاروباری طبقات کو ذیادہ سے ذیادہ سہولیات میسر آئیں

اسمگلنگ کے خاتمے کے لئے جامع منصوبہ لارہے ہیں جس سے جدید خطوط پر نہ صرف اسمگلنگ کا خاتمہ ہوگا

بلکہ سیکورٹی کی صورتحال میں بھی نمایاں بہتری آئے گی

کوئٹہ:وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کو بلوچستان میں جاری ترقیاتی اسکمیوں کے حوالے سے بریفنگ دی جارہی ہے۔

پاک افغان سرحد پر باڑ کی تنصیب کے بعد اسمگلنگ کا خاتمہ ہوجائے گا

اسد عمر کہنا تھا کہکچھ وقت قبل ملک میں کرنٹ اکاو¿نٹ خسارہ دو ارب روپے تھا جس کی وجہ سے اس کے خاتمے کے لئے اسٹیٹ بنک کو فوری اقدامات کرنے پڑے

اب یہ خسارہ کم ہوکر ایک ارب روپے ہوگیا ہے اور یہ بتدریج کمی کی جانب جائے گا جس کے بعد اسٹیٹ بینک کے لئے ریلیف کی فراہمی ممکن ہوسکے گی

انہوں نے کہا کہ ماضی میں نجی شعبے سے مشاورت نہ ہونے کے باعث پی ٹی اے اور ایف ٹی اے جیسے عالمی معاہدات میں پاکسان کی ایکسپورٹ میں اضافے کے بجائے کمی واقع ہوئی لیکن اب ایسے نہیں ہوگا اور نجی شعبے کو ہر سطح پر شامل مشاورت رکھیں گے

وزیر خزانہ اسد عمر خان نے بتایا کہ پاک ایران ٹریڈ کے فروغ کے لئے30 دن کے اندر رپورٹ تیار کرنے کی ہدایت جاری کردی ہے

انہوں نے یقین دلایا کہ بلوچستان کے تاجروں اور کاروباری طبقات کو درپیش مسائل کے حل کے لیے ڈپٹی اسپیکر قومی اسمبلی قاسم خان سوری کے تواسط سے مشاورت کا عمل شروع کررہے ہیں جس کے خاطر خواہ نتائج برآمد ہونگے۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.