بلوچستان اسمبلی کے اراکین کی ماہانہ تنخواہ مراعات 4لاکھ سے زائد

0

رپورٹ۔۔۔۔۔۔۔۔ محمد ندیم خان

عوام کی مفلوک الحالی اور غربت مسائل میں گھرے ہونے کے باوجود الیکشن کے دنوں میں وہ اپنے نمائندے کو ووٹ دیتے ہیں لیکن پانچ سال کا عرصہ گزرنے کے باوجود ان کی غربت اور مسائل جوں کے توں رہتے ہیں اور منتخب نمائندے کپڑے جھاڑ کر اسمبلی سے نکلتے ہیں کہ ہم نے اپنا فرض ادا کردیا

عوام نمائندوں کو جس مقصد کیلئے اسمبلی بھیجتے ہیں وہ شاید پورا ہو یا نہ ہو لیکن ان کواس کامعاوضہ بلاتاخیر مل جاتا ہے جس کااندازہ اس رپورٹ سے بخوبی لگ سکتا ہے

ارکان بلوچستان اسمبلی ” مشاہرات واستحقاقات ایکٹ ” کے تحت بھاری تنخواہیں وصول کررہے ہیں۔بلوچستان اسمبلی سیکرٹریٹ کے ریکارڈ کے مطابق ارکان صوبائی اسمبلی بلوچستان، مجموعی طور پہ 4 لاکھ 40 ہزار تنخواہ ماہوار حاصل کرتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,759

مراعات تنخواہوں کی تفصیل
3لاکھ تنخواہ جبکہ ٹیلیفون الاؤنس کی مد میں 10 ہزار ، سمچوری الاؤنس 50 ہزارآفس مینٹیننس الاؤنس 10 ہزار ، ہاوس رینٹ 50 ہزار اور یوٹیلیٹی الاؤنس کی مد میں 20 ہزار ماہانہ بلوچستان اسمبلی کے ہر رکن کو حاصل ہوتے ہیں۔

جبکہ ٹی اے ڈی اے اور سفری اخراجات کے لیے الگ رقم مختص ہے۔

دوران اسمبلی اجلاس میں کوئٹہ سے باہر سے آنے والے ارکان اسمبلی کو جائے مقام سے بذریعہ سڑک روانگی اور واپسی گھر تک 10 روپے فی کلو میٹر کے حساب سے مائلیج الاؤنس کی سہولت حاصل ہے۔

اس کے علاوہ دوران اجلاس حاضر ارکان کو ٹی اے ڈی کی مد میں 4 ہزار روپے اور اسپیشل الاونس کی مد میں بھی 4 ہزار اور کنوینس الاؤنس کی مد میں 3 ہزار روپے یومیہ کی سہولت حاصل ہے۔

مالی سال میں ایک مرتبہ سفری اخراجات کی مد میں 5لاکھ جبکہ ہوائی جہاز میں بزنس کلاس میں سفر ، بذریعہ ٹرین ائیر کنڈیشن کلاس میں سفر کرنے کے مجاز ہیں۔یہ تمام مراعات انکم ٹیکس سے منہا ہیں

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.