بلوچستان ،سیلاب سے تحصیل لاکھڑا میں 35ہزار سے زائد لوگ متاثر

0

ویب ڈیسک

وزیر اعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کی ہدایت پر ڈی جی پی ڈی ایم اے عمران زرکون اور کمشنر قلات ڈویژ ن کا خضدار کی تحصیل سارونہ اور لسبیلہ کے سیلاب متاثرہ علاقوں کا دورہ ا ور امدادی سرگرمیوں کا جائزہ لیا، کمشنر قلات ڈویژ ن نے انہیں سارونہ اور شاہنورانی کے مواصلاتی رابطوں کی بحالی اور امدادی سرگرمیوں سے آگاہ کیا لسبیلہ کے سیلاب متاثرہ علاقے آہورہ میں قائم ریلیف کیمپ اور میڈیکل کیمپ کا بھی دورہ کیا

ڈسٹرکٹ ہیلتھ آفیسر ڈاکٹر احمد علی نے انہیں ریسکیو آپریشن کے دوران سیلاب متاثرین کو طبی سہولیات فراہمی اور ڈی جی ہیلتھ شاکر بلوچ کی جانب سے سیلاب متاثرین کے لئے ہیپا ٹائٹس بی اور سی کے دس ہزار کٹس کی فراہمی اور متاثرہ علاقوں تک موبائل یونٹ کے ذریعے رسائی اور دیگر اقدامات سے آگاہ کیا

ڈی جی پی ڈی ایم اے نے لسبیلہ کے ہیڈ کوارٹر اوتھل میں پی ڈی ایم اے اور ضلعی انتظامیہ کے زیر نگرانی قائم ریلیف کلیکشن پوائنٹ کا دورہ کیا اور بریفنگ میں شرکت کی

ڈی جی پی ڈی ایم اے کے زیر نگرانی منعقد ہ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ ابتدائی دس روز ریلیف آپریشن کے پلان اور متاثرین کے لئے یو این معیار کے مطابق ہر متاثرہ خاندان کی ضروریات کے مطابق ریلیف فوڈ اینڈ نان فوڈ آئٹم کی فراہمی کا فیصلہ کیا گیا

ڈپٹی کمشنر لسبیلہ شبیر احمد مینگل نے بریفنگ میں ڈی جی پی ڈی ایم اے کو بتایا کہ تحصیل لاکھڑا میں 35ہزار سے زائد لوگ سیلاب سے متاثر ہوئے ہیں ابتدائی اطلاعات کے مطابق 6ہزار خاندانوں کی بحالی تک انہیں تین ماہ تک امدادی راشن فراہمی کی ضرورت ہے پی ڈی ایم اے اور دیگر صنعتی اداروں کی جانب سے امدادی اشیاء موصول ہوئی ہیں وہ متاثرین تک ہیلی کاپٹروں کے ذریعے پہنچائی گئی ہیں

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,759

انہوں نے بتایا کہ پاک فوج ایدھی فاوٴنڈیشن لسبیلہ ویلفیئر ٹرسٹ نے ریسکیو آپریشن میں بھر پور کرادر ادا کر کے سینکڑوں لوگوں کی جانیں بچائیں

بریفنگ میں بتایا گیاکہ ریسکیو آپریشن کے دوران سیلاب متاثرہ علاقوں میں ہیلی کاپٹر کے ذریعے آج بھی سیلابی پانی میں پھنسے ہوئے چھ افراد کو بحفاظت ریسکیو کیا گیا جن میں تین خواتین اور تین مرد شامل تھے

انہوں نے بتایا کہ گزشتہ تین روز سے سیلابی پانی میں گھرے ہوئے دیہاتوں کا مواصلاتی رابطہ بحال کرنے کے لئے ہیوی مشینری کے ذریعے اقدامات جاری ہیں اور ہیلی کاپٹر کے ذریعے سیلاب سے متاثرہ علاقوں میں امدادی اشیاء فراہم کی جا رہی ہیں

ریلیف آپریشن ضلعی انتظامیہ کے زیر نگرانی اے ڈی سی ریونیوعزت نذیر بلوچ اور فوکل پرسن حمود الرحمان کی سربراہی میں تحصیلدار اوتھل نصیر احمد جاموٹ، تحصیلدار لاکھڑا غلام مصطفی رئیسانی، نائب تحصیلدار یعقوب شیخ، تحصیلدار آفتاب موندرہ، عبدالجلیل سومرواور غلام نبی آچرہ پر مشتمل ٹیمیں جنگی بنیادوں پر ریلیف آپریشن جاری رکھے ہوئے ہیں۔

ڈپٹی کمشنر نے بریفنگ میں بتایا کہ ضلعی انتظامیہ کے زیر نگرانی سیلاب متاثرین کے لئے قائم ریلیف کیمپ کے فوکل پرسن اسسٹنٹ کمشنر حب کیپٹن مہر اللہ بادینی مانیٹرنگ اور لیڈ کر رہے ہیں۔

بریفنگ میں ڈی جی پی ڈی ایم اے اور کمشنر قلات ڈویژن کو بتایا کہ حالیہ بارشوں کی تباکاریوں سے لسبیلہ میں مویشی بانی اور زراعت کا شعبہ فارم ٹو مارکیٹ رابطہ سڑکیں آبنوشی کی اسکیمات حفاظتی بندات کو شدید متاثر ہوئے ہیں متاثرین کو ہونے والے مالی نقصانات کا جائزہ اور تخمینہ لگانے کے لئے 20 سروے ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں جو شفافیت کے ساتھ سروے رپورٹس مرتب کرینگی۔

کمشنر قلات ڈویژن نے ریسکیو آپریشن میں ایدھی ویلفیئر فاوٴنڈیشن کی خدمات اور ان کی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر عبدالحکیم لاسی کے جذبے اور انسانیت دوستی کو سراہتے ہوئے کہا کہ انتظامیہ کے ساتھ ایدھی کے رضاکاروں نے قدرتی آفت میں ہر اول دستے کا کردار کیا ہے وہ لائق تحسین ہے ہم ان کی خدمات کو قدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں ملک میں جہاں کہیں بھی قدرتی آفات پیش آتی ہیں وہاں ایدھی کی ٹیمیں لوگوں اور ایڈمنسٹریشن کی مدد کو پہنچ جاتی ہیں۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.