بھارت کی دھمکیوں سے مرعوب نہیں ہونگے ،شاہ محمود قریشی

0

ویب ڈیسک

وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی نے بھارت کو ایک بار پھر امن کا پیغام دیتے ہوئے بھارتی حکومت اور قیادت پر زوردیا ہے کہ وہ ضبط و تحمل کا مظاہرہ کرتے ہوئے اپنا جنگی جنون اور جارحانہ طرزعمل ترک کرے، پاکستان امن پسند ملک ہے،ہم امن چاہتے ہیں، بھارت کی دھمکیوں اورجارحانہ رویے سے ہرگز مرعوب نہیں ہوں گے، پاکستان کی تمام سیاسی جماعتیں، تمام ادارے اور پاکستان کا بچہ بچہ اپنے ملک کی حفاظت کے لیے متحد ہے۔

سرکاری خبررساں ادارے کے مطابق اتوار کو میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے وزیرخارجہ نے بھارت کو کسی بھی مہم جوئی کا خیال دل سے نکالنے کی تنبیہ دیتے ہوئے کہاکہ پوری پاکستانی قوم، قیادت، سیاسی جماعتیں اورمسلح افواج متحد ہے۔

وزیر خارجہ نے بھارت کو واضح پیغام دیا کہ پاکستان امن پسند ملک ہے اوروہ بھارت کی دھمکیوں اورجارحانہ رویے سے ہرگز مرعوب نہیں ہوگا ، پوری قوم وطن کے دفاع کیلئے متحد ہے اورہماری فوج، سیاستدان، نوجوان اور بزرگ بھارت کی کسی بھی جارحیت کے مقابلے کیلئے شانہ بشانہ ہیں۔

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,769

وزیرخارجہ نے کہاکہ پاکستان کشیدگی کے خاتمے کیلئے اقدامات کررہا ہے تاہم بھارت پاکستان پر دباو ڈالنے کیلئے ہنگامی تیاریاں کررہا ہے۔ بھارتی حکومت نے مقبوضہ کشمیر میں ملازمین کے لئے ایک اعلامیہ جاری کرتے ہوئے ان کی چھٹیاں منسوخ کردیں اور انہیں خوراک ذخیرہ کرنے کا حکم دیا، بھارت بڑے پیمانے پرکارروائی کے لئے دس ہزار اضافی فوجی مقبوضہ کشمیر بھیج رہا ہے جس سے بھارت کے جارحانہ عزائم کی عکاسی ہوتی ہے،

بھارتی حکومت اور وزیراعظم کو کشمیری عوام کے بہیمانہ قتل عام کا سلسلہ بندکرنے کے ساتھ ساتھ اپنے غیرذمہ دارانہ رویوں کو ترک کرنا چاہئیے۔ وزیرخارجہ نے کہاکہ کشمیری خوف میں مبتلا ہیں، دکانیں اور بازار بند ہیں۔ لوگوں کی جائیدادوں پر حملے کیے جا رہے ہیں، گاڑیاں جلائی جا رہی ہیں، سرچ آپریشن کیے جارہے ہیں۔ درجنوں گرفتاریاں کی جارہی ہیں، حریت لیڈرشپ کو کشمیر سے نکال کر دوسری جگہ منتقل کیا جارہا ہے۔اب محبوبہ مفتی بھی کہتی ہیں کہ آپ سوچ کو قید نہیں کرسکتے۔

وزیرخارجہ نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کی نسل ایک نئی نسل ہے، ان کے جذبات کو دبایا نہیں جاسکتا۔ ہندوستان میں مثبت سوچ رکھنے والوں کو اپنی حکومت کو پیغام دینا چاہیے کہ پورے خطے کے امن کو داو پر مت لگائیں۔

وزیرخارجہ نے کہا کہ ہمارا ایک قیدی شاکراللہ وہاں قید کاٹ رہا تھا جسے دیگر قیدیوں نے حملہ کر کے قتل کر دیا اور پولیس تماشائی بنی رہی ، بھارت کی حکومت نے بڑھتی ہوئی عدم برداشت اورجارحیت پر خاموشی اختیار کررکھی ہے حالانکہ بھارتی سپریم کورٹ نے حکومت اورمتعلقہ سیکرٹریوں کو ہدایات جاری کی ہیں کہ وہ لوگوں کو اس طرح کے حملوں سے محفوظ رکھے۔

انہوں نے کہا کہ بی جے پی خطے میں جنونی رویہ ترک کرے، پاکستان کی تمام سیاسی جماعتیں، تمام ادارے اور پاکستان کا بچہ بچہ اپنے ملک کی حفاظت کے لیے متحد ہے۔ وزیرخارجہ نے کشمیری عوام کے جائز حق خودارادیت کیلئے پاکستان کی مکمل حمایت کا اعادہ بھی کیا۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.