پی ایس ایل سیزن چار میں کوئٹہ کے کھلاڑی نظر انداز

0

رپورٹ۔ ۔۔۔مہک شاہد

پاکستان سپر لیگ سیزن چار کے کانٹے دار مقابلے متحدہ عرب امارات میں جاری ہیں اب تک پندرہ میچز کھیلے جا چکے ہیں۔ ساری ٹیمیں اس بار کا ٹائٹل جیتنے کی بھرپور کوشش کر رہی ہیں دیکھنا ہے اس دفعہ کون سی ٹیم پی ایس ایل سیزن چار کا ٹائٹل اپنے نام کرتی ہے۔

پرفارمنس کی بات کی جائے تو ہر سیزن کی طرح اس بار بھی سرفراز احمد کی قیادت میں کھیلنے والی کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم کی پرفارمنس ساری ٹیموں سے اچھی رہی ہے پوائنٹ ٹیبل پر چار میچز جیت کر آٹھ پوائنٹس کے ساتھ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی ٹیم سرفہرست ہے۔

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,759

کوئٹہ گلیڈی ایٹرز نے اب تک اس سیزن میں پانچ میچز کھیلے ہیں جن میں چار میں کامیابی جبکہ ایک میں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔ کوئٹہ سے تعلق رکھنے والے دو کھلاڑیوں کو اسکواڈ میں شامل کیاگیا ہے لیکن اب تک ایک میچ میں بھی موقع نہیں دیا گیا ایک بار پھر کوئٹہ کے ٹیلنٹ کو نظر انداز کیا جا رہا ہے۔

پچھلے ایڈیشن کی بات جائے تو پچھلے سال ٹیم میں ایک بھی کوئٹہ کا کھلاڑی شامل نہیں تھا اور اس سے پہلے دو سیزن میں بسم اللہ خان کو اسکواڈ میں شامل کیا گیا تھا لیکن بسم اللہ خان کو بہت کم موقع دیا گیا اور اس بار کوئٹہ کے دو کھلاڑیوں کو جلات خان اور محمد اصغر کو اسکواڈ میں شامل کیاگیا ہے لیکن اب تک ایک میچ میں بھی موقع نہیں گیا ۔

محمد اصغر جن کا تعلق بلوچستان کے شہر چمن سے ہے اور اس سیزن سے پہلے وہ پشاور زلمی کے لیے کھیل چکے ہیں۔ اور پشاور زلمی کے لیے کھیلتے ہوئے وہ 21 وکٹیں لے چکے ہیں اور کوئٹہ سے تعلق رکھنے والے کھلاڑی جلات خان جن کی ڈومیسٹک میں اچھی پرفارمنس رہی ہے۔ لیکن بدقسمتی سے اب تک ان کھلاڑیوں کو اس پی ایس ایل میں موقع نہیں مل سکا ۔

سوال یہ ہے کہ کیا کوئٹہ سے تعلق رکھنے والے کھلاڑیوں کو آگے کے میچز میں موقع ملے گا یا پھر دونوں کھلاڑی بغیر کوئی میچ کھیلے واپس آجائیں گے۔ کوئٹہ سے تعلق رکھنے والے کھلاڑیوں کے پاس اپنے ٹیلنٹ کو منوانے کے لئے اتنی سہولیات نہیں ہیں۔ یہ ایک ایسا پلیٹ فارم ہے جہاں اپنے ٹیلنٹ کو منوا سکتے ہیں لیکن بدقسمتی سے اب تک ایک میچ میں بھی ان کو موقع نہیں دیا گیا ۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.