احتساب انڈے والے نہیں’’ڈنڈے‘‘ والے کررہے ہیں ،سینیٹرحافظ حسین احمد

0

مسلم لیگ والے سڑکوں پر نکلنا نہیں چاہتے اس لیے ان ہاؤس تبدیلی کی باتیں کررہے ہیں،

بی بی اور پنجاب کے میاں حقیقی اپوزیشن کا ساتھ دیتے تو آج ان کا یہ حشر نہ ہوتا۔

جمعہ کے روز جیکب آبادکے صحافیوں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے حافظ حسین احمد نے مزید کہا کہ احتساب ’’ڈنڈے‘‘ والے کررہے ہیں ’’انڈے ‘‘ والے تو ’’انڈے‘‘ والے ہیں، کیوں کہ ’’ڈنڈے‘‘ والوں کو براہ راست نہیں کہا جاسکتا اس لیے توپوں کا رخ ’’انڈے‘‘ والوں کی طرف ہے یہ بات طے ہے کہ ’’انڈے‘‘ والے ’’ڈنڈے‘‘ والوں کے مرہون منت ہیں ، انہوں نے کہا کہ ان ہاؤس تبدیلی کی باتیں کی جارہی ہے درحقیقت مسلم لیگ والے سڑکوں پر نکلنا نہیں چاہتے بلکہ معاملات کو ماضی کو طرح بات چیت اور ڈیل کے تحت حل کرنا چاہتے ہیں

اس لیے ورکروں کو مطمئن کرنے کے لیے ان ہاؤس تبدیلی کی باتیں کی جارہی ہیں

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,730

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی سیاسی اور پارلیمانی تاریخ میں ان ہاؤس تبدیلی کی کامیابی کے بہت کم امکانات ہوتے ہیں

جبکہ اس وقت مختلف جماعتوں کے پنچھی اپنے آشیانے بدل کر حکومتی کیمپ میں جانے کے لیے پر تول رہے ہیں،

زرداری کا کہنا کہ وہ اکیلے ہی سب کچھ کریں گے وہ اکیلے کچھ نہیں کرسکتے یہ سب اکیلے رہ کر اکیلے نقصان کھائیں گے

زرداری کو واپس اپوزیشن کی طرف لوٹنا ہوگا اگر یہ کل ہماری بات مان لیتے تو آج اس طریقے سے پریشان نہ ہوتے،

پیپلز پارٹی اور مسلم لیگ نواز کی قیادت کاش اپوزیشن کے اتحاد کے حوالے سے مولانا فضل الرحمن کی بات کو اہمیت دیتے تو آج بی بی اور پنجاب کے میاں بند گلی میں نہ ہوتے۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.