اللہ کاشکر ہے گھر خیریت سے پہنچ گیا ہوں،ڈاکٹر ابراہیم خلیل

0

ویب ڈیسک

نیورو سرجن کے بھتیجے محمد عمر نے بتایا کہ اغوا کاروں نے ڈاکٹر ابراہیم خلیل کو کراچی میں چھوڑا، جہاں سے وہ فلائٹ لے کر بذریعہ جہاز کوئٹہ پہنچے محمد عمر کے مطابق ڈاکٹر ابراہیم خلیل تھکے ہوئے اور ذہنی طور پر ڈسٹرب ہیں

اس سے قبل رپورٹس سامنے آئی تھیں کہ ڈاکٹر ابراہیم خلیل کو نامعلوم مسلح افراد نے آج صبح 6 بجے کے قریب زخمی حالت میں چمن کے مال روڈ پر چھوڑا، جہاں سے وہ ایک ٹیکسی کے ذریعے کوئٹہ کے علاقے پروفیسرز کالونی میں واقع اپنے گھر پہنچے تھے

ڈاکٹرا براہیم خلیل نے گھر پہنچنے پر اللہ کا شکر اداکیا اہل خانہ اور رشتہ داروں کے درمیان آکر خوش ہوں ڈاکٹرز برادری کا بے حد مشکور ہوں کمزوری محسوس کررہاہوں زیادہ بات نہیں کر سکتا

واضح رہے کہ نیورو سرجن ڈاکٹر ابرہیم خلیل کو 13دسمبر کوکوئٹہ کے علاقے جناح ٹاؤن سے اغوا کیا گیا تھا ان کی بازیابی 48روز بعد ہوئی

یہ بھی پڑھیں
1 of 8,759

صدر پاکستان میڈیکل ایسوسی ایشن کے مطابق میری بازیاب ہونیوالے ڈاکٹرابراہیم خلیل سے بات ہوئی ان کی طبیعت تھوڑی ٹھیک نہیں ہے ڈاکٹرز مغوی ڈاکٹرابراہیم کاطبی معائنہ کررہے ہیں

ڈاکٹر ابراہیم کی حالت خطرے سے باہر ہے ڈاکٹرز نے ڈاکٹر ابراہیم کو انجکشن اور ادویات دے دی ہیں جہاں ڈاکٹر کو چھوڑا گیا وہاں سے کوئٹہ تک انہوں نے 10گھنٹے کا سفر کیا

صدر پی ایم اے کے مطابق خدشہ ہے کہ ڈاکٹر ابراہیم خلیل تاوان کے ادائیگی کے بعد ہی گھر پہنچے ماضی میں بھی ڈاکٹرز تاوان کی ادائیگی کے بعد ہی گھر پہنچے ہیں

ڈی آئی جی کوئٹہ عبدالرزاق چیمہ ڈاکٹر ابراہیم خلیل کے گھر گئے ڈی آئی جی نے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ ڈاکٹر ابرہیم خلیل کے بحفاظت گھر پہنچنے پر بے حد خوشی ہے

ڈاکٹر کو اس وقت آرام کی ضرورت ہے جب وہ چاہیں تب تفصیلی معلومات حاصل کی جائینگی ڈاکٹر ابراہیم خلیل کی عدم موجودگی میں ان کے اہل خانہ کے ساتھ برائے راست رابطے میں تھے ڈاکٹرز تنظیموں کے ساتھ بیٹھ کر مطالبات سنے جائیں گے ڈاکٹرز کو سیکورٹی فراہم کی گئی تھی تب ہی اغوا کا صرف ایک واقعہ پیش آیا

ڈاکٹر ابراہیم خلیل کے اغوا کی واردات میں ملوث افراد کو قانون کی گرفت میں لایا جائیگااغوا کاروں نے مغوی ڈاکٹر کو کہاں چھوڑا یہ کہنا قبل از وقت ہے

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.