چاغی ،پانی کی زیر زمین سطح برقرار رکھنے کیلئے گیارہ ڈیمز بنانے کا منصوبہ

دالبندین شہر کے ماسٹر پلان پر کام ہوگا پہلے مر حلے میں ڈیڈھ ارب روپے کی لاگت سے جلد کام کا آغاز ہوگا

بلوچستان24

ضلع چاغی کے تمام علاقوں میں یکساں بنیاد پر ترقی ہوگی ضلع کے بنیادی مسائل کو حل کرنا میری اولین ترجیحات میں شامل  ہے اس وقت ضلع بھر میں بے شمار اجتماعی ترقیاتی کام جاری ہے

صوبائی وزیر مواصلات و تعمیرات میر محمد عارف محمد حسنی کا یک مچ میں  ساڑھے 3 کروڑ روپے کی لاگت سے تیار ہونے والا آبنوشی اسکیم کا افتتا حی تقریب کے موقع پر علاقے کے لوگوں سے بات چیت

صوبائی وزیر نے بتایا کہ ضلع بھر کے 270 دیہاتی علاقوں میں واٹر سپلائی اسکیم لگائے جائینگے،اور دالبندین ڈسڑکٹ ہسپتال کے تزئین میں ساڈھے ت کروڑ روپے خرچ ہونگے، 5 کروڑ کی لاگت سے دالبندین بس اڈے کا کام جاری ہے،

پانی کی سطح کو برقرار رکھنے کے لیے 11 نئے ڈیمز تعمیر کیا جائے گا پہلے مر حلے میں ن9 اور 6 کے مزید پی سی ون بن رہے ہیں۔ضلع بھر میں 15 نئے بی ایچ یوز بنائے جائینگے،دالبندین شہر کے  آبنوشی کے لیے 41 کروڑ روپے کی لاگت سے جلد کام شروع ہوگا،
ضلع بھر کے 100 پرائمری اسکولوں کے مرمت اور تزئین کیا جائے گا،انکا مزید کہنا تھا دالبندین شہر کے ماسٹر پلان پر کام ہوگا

پہلے مر حلے میں ڈیڈھ ارب روپے کی لاگت سے جلد کام کا آغاز ہوگا انکا مزید کہنا تھا میرا مقصد یہ ہے کہ اس ضلع کو ماضی میں پسماندہ رکھا گیا ہے اب اس ضلع کو عملی طور پر ترقی دینا ہے تاکہ اس پسماندگی سے لوگوں کو چھٹکارا مل سکیں اور ت

فتان چہتر کے درمیان دو نئے ایمرجنسی سینٹر بھی تعمیر کیا جائے گا تاکہ آر سی ڈی شاہراہ پر ایمرجنسی کے دوران زخمیوں بھر وقت  طبی سہولت مل سکیں انکا کہنا تھا ترقیاتی منصوبوں پر کسی بھی قسم کا سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا

میری کوشش یہ بھی ہے ضلع چاغی میں اعلی تعلیمی ادارے بنائے جائے وہ دور گزر گیا لوگ ترقی کے لیے ترستے تھے اب انشائاللہ ہر کام معیاری اور صاف شفاف ہوگا کرپشن لوٹ مار عوام کو اندھیرے میں رکھنے کا دور گزر چکا ہے

بہت جلد عوام تبدیلی محسوس کرینگے بعدازہ صوبائی وزیر میر محمد عارف محمد حسنی نے دالبندین میں مختلف ترقیاتی کاموں کا معائنہ کیا ضلع کے مختلف قبائلی عمائدین سے ملاقات کیا اور شہریوں کے درمیان بیٹھ کر ان سے گفتگو کی اور انکے مسائل سنے اور حل کرنے کی یقین دہانی بھی کردیا

اپنا تبصرہ بھیجیں